جزیرہ مانوس اور نارو کیمپوں کو بند کرے

ملبرین کے مرکزی شاہراہ فلینڈر اسڑیٹ میں ہزاروں افراد خصوصا معمر افراد بچوں اور طالب علموں نے سڑکوں پر مارچ کرتے ہوئے حکومت سے مطالبہ کر رہے تھے کہ جزیرہ مانوس اور نارو کیمپوں کو بند کر کے پناہ کے متلاشی افراد کو آسٹریلیا منتقل کرے بعض مقامات پر سڑک کے کنارے ہجوم نے مظاہرین کا بھر پور استقبال کیا

ریلی سے قبل جلسہ عام اسٹیٹ لائبریری کے پاس منعقد ہوئی جس میں ہزاروں افراد شریک تھے مقررین نے حکومت کی مہاجر مخالف پالیسیوں پر سخت تنقید کی اور مصیبت میں پھنسے افراد کی کیمپوں سے رہائی اور انہیں آسٹریلیا منتقل کرنے کا مطالبہ کیا ناگفتہ نہ رہے اس وقت حراستی مراکز میں مختلف ممالک کے سینکڑوں افراد قید ہے چند ماہ قبل ہزارہ مہاجرین اور بچوں کو انکے فیملی کے ساتھ ایک معاہدہ کے تحت امریکہ منتقل کیا گیا لیکن کمپ میں اب بھی سینکڑوں مہاجرین موجود ہے 
ریلی میں ہزارہ شمامہ ایسوسی ایشن کی نمائندگی نائب صدر نادر بیگ نے کی جبکہ ہزارہ سنگر تقی خان آزرہ نے بھی یونین کی طرف سے شرکت کی
جلسہ عام کے بعد ریلی نکالی گئی جو شہر کی مرکزی شاہراہ سے ہوتے ہوئے مقامی پارک میں دوبارہ جلسہ عام میں تبدیل ہوئی 

Taqi Khan Azra among protesters.

جس سے دیگر مقررین کے علاوہ تقی خان آزرہ نے بھی خطاب کیا انہوں نے ہزارہ گنجی کوئٹہ میں بے گناہ انسانوں کی ہلاکت اور ہزارہ نسل کشی کا زکر کیا 
ریلی آسٹریلیا کے دیگر شہروں میں بھی نکالی گئی ریلی اور جلسہ عام کے حوالے سے حکومت اور منتظمین
نے اچھی خاصی انتظامات کی تھی

لیاقت علی

Facebook Comments