کوه به کوه نمیرسه، آدم به آدم میرسه

نامور ہزارہ گلوکار استاد رجب حیدری کے اعزاز میں نویان باتور چمن سرشار نے ایک عشائیہ کا اہتمام کیا جسمیں علی ظہیر صاحب، معروف غزل خواں استاد غضنفر علی دمبورہ کے تاروں سے سر بکھرنے والے استاد خیرعلی شہرستانی ہنرمند سید زمان، صدر ہزارہ شمامہ ایسوسی ایشن ناظر یوسفی کے علاوہ دیگر دوستوں مہمانوں نے شرکت کر کے محفل کے رونق کو دوبالا کردیا
استاد غضنفر علی کی گائیکی نے جہاں محفل کی روح کو تازگی اور فرحت بخش رہی تھی وہی ان کے پہلو میں بیٹھے استاد رجب حیدری کو ساتھ دیکھ کر تنظیم کے ان دونوں کی یاد آئی جب ان کا نام سن کر شایقین کے جمع غفیر اوماغ پروگرام میں شرکت کیا کرتے تھے
سچ کہا تھا کسی نے کہ

کوه به کوه نمیرسه ، آدم به آدم میرسه

ان دنوں استاد رجب حیدری اپنے انقلابی ترانوں کی معرفت بہت مشہور تھے ان کی سریلی آواز جہاں قوم کے مخالفین کے کانوں پر ناگوار گزرتی تھی وہی نوجوانوں کے دلوں میں قوم سے محبت کا جذبہ اور ابھرتی تھی
یہ خوبصورت شام ہزارہ شعراء محمد علی اختیار، رضا واثق، نبی حجازی اور صاحب اعزاز فضیلت محسن چنگیزی کو اچھے الفاظوں میں یاد کر کے اخٹام کو پہنچی

گروپ تصویر

لنک میں میری پسند کا ایک غزل استاد غضنفر علی کے خوبصورت آواز میں سنئے
به مقابل دو چشمم … چه َچُشم سياه نشسته
به كمند زلف ليلا همه جا به جا نشسته

لیاقت علی

Facebook Comments